اومیکرون وائرس کیا ہے؟ سعودی وزارت صحت کی وضاحت

3 تعبيرية جمعرات 2 دسمبر‬‮ 1202 - (صبح 7 بجکر 85 منٹ)

شیئر کریں:

اومیکرون وائرس کیا ہے؟ سعودی وزارت صحت کی وضاحت ریاض : سعودی وزارت صحت کے ترجمان نے کورونا وائرس کی دوشکلوں ڈیلٹا اوراومیکرون کے درمیان فرق سے متعلق وضاحت کی ہے، نئے وائرس پر عالمی ردِعمل کے أسباب سے بھی آگاہ کیا۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق بدھ کو پریس بریفنگ میں ڈاکٹر محمدالعبد العالی نے کہا کہ یہ بات غلط ہے کہ وائرس کی پہلی شکلوں اور نئی شکل کے حوالے سے عالمی ردِعمل مختلف ہے جو ردِعمل کورونا وائرس کی پہلی شکلوں پر آیا تھا ویسا ہی اب بھی ہے۔

وزارت صحت کے ترجمان نے کہا کہ سائنسدانوں کا ردِعمل اور مختلف وائرسوں کے بارے میں ان کا انداز یکساں ہے تاہم معاشرے کا رویہ مختلف ہو سکتا ہے، اس کی وجہ یہ ہے کہ معاشرے میں وائرس کے بارے میں خبر کس انداز سے پہنچی ہے۔

العبد العالی نے کہا کہ اومیکرون پر ردِعمل مختلف اس لیے نظر آرہا ہے کیونکہ ابھی یہ نیا ہے اور اس حوالےسے سائنسی معلومات ریسرچ اور جائزہ جات مکمل نہیں ہیں۔

وزارت صحت نے اطمینان دلایا کہ مملکت میں کورونا وائرس سے افراد اورمعاشرے کے تحفظ کےلیے جو انتظامات کیے گئے ہیں وہ کافی ہیں۔

الوطن اخبار کے مطابق وزارت صحت کے ترجمان نے کہا کہ سرکاری اقدامات کے باوجود ہرفرد کو اپنے طور پر وائرس سے بچاو کےلیے احتیاطی تدابیر کا خیال رکھنا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ مشاہدے میں آیا ہے کہ کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے ویکسین نہ لگوانے سے وائرس کی نئی شکلیں نمودار ہورہی ہیں، اسی طرح پبلک مقامات پر ماسک کی پابندی نہ کرنے سے بھی وائرس پھیلنے کا خدشہ بڑھ جاتا ہے۔