"شمال کی گرج سعودی سلامتی کے دشمنوں کے لیے پیغام ہے"

17464 تعبيرية ہفتہ 16 اپریل‬‮ 6102 - (رات 01 بجکر 94 منٹ)

شیئر کریں:

"شمال کی گرج سعودی سلامتی کے دشمنوں کے لیے پیغام ہے" سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کا ترکی کا دورہ جاری ہے جہاں ان کی صدر رجب طیب ایردوآن کے ساتھ بات چیت بھی ہوئی ہے۔ خادم حرمین شریفین دو روزہ (جمعرات اور جمعہ) اسلامی تعاون تنظیم کے سربراہ اجلاس میں بھی شرکت کریں گے۔ سربراہ اجلاس سے قبل وزراء خارجہ کی سطح کا ایک اجلاس منعقد کیا گیا۔ توقع ہے کہ سربراہ اجلاس کے ایجنڈے میں خطے کے بحرانات اور ایرانی مداخلت کے معاملات سرفہرست ہیں۔ ادھر ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے باور کرایا ہے کہ سعودی عرب کے ساتھ ان کے ملک کے تعلقات انتہائی مضبوط ہیں۔ انہوں نے شاہ سلمان کو خطے کے امن کا دریچہ قرار دیا۔ انقرہ کے صدرارتی محل میں ہونے والی بات چیت کے دوران شاہ سلمان کا کہنا تھا کہ "آج کی حقیقت ہم سے تقاضہ کرتی ہے کہ اہم ایک مناسب فضا قائم کرنے کے لیے مل جل کر کام کریں، ایسی فضا جہاں خطے کے ممالک کے عوام امن و استحکام اور ترقی کے حوالے سے اپنی امیدوں کو پورا کرسکیں"۔ خادم حرمین نے واضح کیا کہ ترکی کے صدر کے ساتھ ان کی بات چیت کے نتائج سے "ہمارے اسٹریٹجک تعلقات مضبوط ہوں گے اور اس طرح ہمارے سیاسی، اقتصادی، تجارتی، فوجی اور سیکورٹی روابط کو پنپنے کے لیے وسیع میدان میسر آئے گا"۔ شاہ سلمان نے باور کرایا کہ اسلامی دنیا میں تعاون اور مربوط کوششوں پر مبنی اتحادوں کے ذریعے اجتماعی اور حکمت عملی کے حامل کام دیکھنے میں آئے ہیں۔ ان ہی میں سے ایک دہشت گردی کے خلاف اسلامی فوجی اتحاد کا قیام بھی ہے۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ خطے کے سب سے بڑی فوجی مشق شمار کی جانے والی "شمال کی گرج"، اسلامی اتحاد کی قیادت کی جانب سے ان تمام عناصر کے لیے ایک پیغام ہے جو ان ممالک کے امن و استحکام کو نقصان پہنچانے کی کوشش کررہے ہیں۔ ترک صدر نے ملاقات کے آغاز پر خادم حرمین شریفین کا پرتپاک خیرمقدم کیا۔ انہوں نے گزشتہ روز شاہ سلمان کو ترکی کا سب سے بڑا شہری اعزاز "جمہوریہ" ایوارڈ دیا۔ اس موقع پر خادم حرمین شریفین نے ترکی اور اس کی قیادت کی جانب سے اپنے اکرام پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ سلوک "دونوں ملکوں کے درمیان دوستی اور تعلقات کی گہرائی کا مظہر ہے، یہ بڑا ایوارڈ صرف میرے لیے نہیں بلکہ سعودی حکومت اور عوام کے لیے بھی قابل فخر ہے"۔ دوسری جانب ترک وزیراعظم احمد داؤد اوگلو نے منگل کے روز انقرہ میں شاہ سلمان سے ان کی قیام گاہ پر ملاقات کی۔