بلی کے بچوں کو اذیت ناک موت دینے والا سفاک ملزم کون ہے؟

1 تعبيرية جمعہ 5 مارچ‬‮ 1202 - (صبح 11 بجکر 85 منٹ)

شیئر کریں:

بلی کے بچوں کو اذیت ناک موت دینے والا سفاک ملزم کون ہے؟ کویت سٹی : بلی کے بچوں پر وحشیانہ تشدد اور انہیں بے دردی سے مارنے کی ہولناک وڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی، پولیس نے سفاک ملزم کو گرفتار کرلیا۔

اس حوالے سے کویتی وزارت داخلہ نے بیان جاری کیا ہے کہ وڈیو میں نظر آنے والے بلی کے بچوں کے قاتل کو گرفتار کرلیا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابقغیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق کویتی وزارت داخلہ نے بتایا ہے کہ سوشل میڈیا پر وڈیو ریکارڈ پر آتے ہی واقعے کا نوٹس لے لیا گیا تھا۔

ترجمان وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ واردات کرنے والے ملزم کو شناخت کرکے طلب کرلیا گیا، دوران تفتیش وڈیو دیکھنے پر ملزم نے جرم کا اعتراف کرلیا۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ہولناک وڈیو میں بلی کے دو بچوں کو پلاسٹک کے ایک ڈبے میں بند کرکے گیس بھری گئی اور پھر اسے اچھی طرح سے بند کردیا گیا۔

وڈیو دیکھنے والے اس وڈیو کے دوران بلی کے بچوں کے کراہنے کی آوازیں بھی سن رہے تھے، دونوں بلی کے بچے اذیت سے تڑپ رہے تھے، وڈیو کے آؓخر میں بلی کے دونوں بچے تڑپتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔

واردات کرنے والے نے وڈیو میں اپنا یہ بیان بھی ریکارڈ کررکھا ہے کہ اسے یہ بلی کے دونوں بچے سڑک پر پڑے ملے تھے شاید ان کی ماں (بلی) انہیں وہاں چھوڑ کر چلی گئی تھی۔

ملزم کا کہنا ہے کہ اس نے بلی کے ان دونوں بچوں کو دودھ پلانے کی کوشش کی تھی مگر دونوں میں سے کسی نے بھی دودھ نہیں پیا پھر میں نے انہیں گیس کے ذریعے انہیں ہلاک کرنے کا فیصلہ کیا۔ ملزم کا کہنا ہے کہ اس نے یہ اقدام بلی کے بچوں کے ساتھ رحمدلی کے جذبے سے کیا تھا۔

اس حوالے سے کویتی وزارت داخلہ نے بتایا ہے کہ اس ملزم کو مزید قانونی کارروائی کے لیے متعلقہ ادارے کے حوالے کردیا گیا ہے۔

دوسری جانب کویتی محکمہ زراعت و ماہی گیری کے ترجمان نے بتایا کہ ملک میں جانوروں پر کسی بھی شکل میں تشدد کی سزا قید اور جرمانہ ہے۔20 ہزار دینار تک جرمانہ ہوسکتا ہے دونوں میں سے کسی ایک سزا پر بھی اکتفا کیا جاسکتا ہے۔