خیبرپختونخوا پھر نیشنل ٹی ٹوئنٹی کا چیمپئن بن گیا

25 تعبيرية بدھ 13 اکتوبر‬‮ 1202 - (شام 7 بجکر 73 منٹ)

شیئر کریں:

خیبرپختونخوا پھر نیشنل ٹی ٹوئنٹی کا چیمپئن بن گیا خیبرپختونخوا نے کامیابی سے ٹائٹل کا دفاع کرتے ہوئے ایک بار پھر نیشنل ٹی ٹوئنٹی کا چیمپئن بننے کا اعزاز ‏حاصل کر لیا۔

قذافی اسٹیڈیم لاہور میں کھیلے گئے ایونٹ کے فائنل میں دفاعی چیمپئن خیبرپختونخوا نے سینٹرل پنجاب کی ‏جانب سے دیا گیا 149 رنز کا ہدف 3 وکٹوں کے نقصان پر حاصل کر کے ٹرافی پر قبضہ جما لیا۔

افتخار احمد کو 16 گیندوں پر ناٹ آؤٹ 45 رنز کی جارحانہ اننگز اور تین وکٹیں حاصل کرنے پر پلیئر آف دی فائنل قرار دیا گیا۔

مطلوبہ ہدف کے تعاقب میں خیبرپختونخوا کی اننگز کا آغاز پراعتماد نہ تھا۔ پہلا اوور میڈین دینے کے بعد محمد حارث 10 کےمجموعی اسکور پر پویلین واپس لوٹ گئے۔

اس موقع پر ان فارم بیٹرز صاحبزادہ فرحان اور صاحبزادہ فرحان نے خیبرپختونخوا کی جانب سے بلڈنگ کے عمل کا آغاز کیا۔دونوں کھلاڑیوں نے 47 رنز کی شراکت قائم کی۔صاحبزادہ فرحان 26 اور کامران غلام 37 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

تاہم کپتان افتخار احمد نےکریز پر پہنچتے ہی دھواں دھار بیٹنگ کرتے ہوئے وکٹ کے چاروں اطراف دلکش اسٹروکس کھیل کر خیبرپختونخوا کو ٹائٹل جتوا دیا۔

انہوں نے 19 گیندوں پر 6 چوکوں اور 2 چھکوں کی بدولت 45 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی۔ عادل امین 25 رنز بناکر ناٹ آؤٹ رہے۔

ثمین گل ، محمد فیضان اور قاسم اکرم نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

اس سے قبل احمد شہزاد اور کامران اکمل کی 85 رنز کی عمدہ شراکت کے باوجود سینٹرل پنجاب کی پوری ٹیم 148 رنز پر ڈھیر ہوگئی۔ تاہم دونوں بیٹرز کے آؤٹ ہونے کے بعد سینٹرل پنجاب کا کوئی بھی بیٹر زیادہ دیر کریز پر نہ ٹھہر سکا اور وقفے وقفے سے آؤٹ ہوکر پویلین واپس لوٹتا رہا۔

احمد شہزاد نے 36 گیندوں پر 4 چوکوں اور 1 چھکے کی مدد سے 42 جبکہ 29 گیندوں پر 3 چوکوں اور 2 چھکوں کی بدولت 44 رنز کی اننگز کھیلی۔ سینٹرل پنجاب کامڈل آرڈر مکمل طور پر فلاپ ہوگیا۔کامران اکمل اور احمد شہزاد کے علاوہ ڈبل فگرز میں داخل ہونے والے سینٹرل پنجاب کے باقی دو بیٹرز قاسم اکرم 20 اور فہیم اشرف 14 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

سینٹرل پنجاب کی پوری ٹیم 19.2 اوورز میں 148 رنز بناکر آؤٹ ہوئی۔ اسپنر افتخار احمد نے 5 رنز کے عوض 3 کھلاڑیوں کی پویلین کی راہ دکھائی۔ محمد عمران نے 3 جبکہ ارشد اقبال نے 2 وکٹیں حاصل کیں۔ خالد عثمان اور عمران خان سینئر نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔