یوم پاکستان پر اسلام آباد میں طاقت کا مظاہرہ، صوبائی دارالحکومتوں میں ٢١ اکیس توپوں کی سلامی

204707 تعبيرية بدھ 23 مارچ‬‮ 6102 - (دوپہر 2 بجکر 05 منٹ)

شیئر کریں:

یوم پاکستان پر اسلام آباد میں طاقت کا مظاہرہ، صوبائی دارالحکومتوں میں ٢١ اکیس توپوں کی سلامی وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں یوم پاکستان کے موقع پر روایتی پریڈ کا انعقاد کیا گیا جس میں مسلح افواج کے دستوں نے شاندار کار کر دگی اور پاک فضائیہ کے طیاروں نے شاندار فلائی پاسٹ کا مظاہرہ کر کے پاکستانی عوام کے دل موہ لئے ٗ ایف 16، جے ایف 17 تھنڈرطیاروں نے شاندار فضائی مظاہرے کئے ٗ طیاروں کو فضاء میں خوبصورت رنگ بکھیر تے ٗدائروں میں گھومتے، الٹی پروازوں، ورٹیکل رول بناتے اور تھنڈر ٹرن سمیت مختلف حیرت انگیز کرتبوں کا مظاہرہ کرتے دیکھ کرپریڈ ایونیو اللہ اکبر کے نعروں سے گونج اٹھا ٗ

پاکستان آرمی کے سپیشل سروسز گروپ اور پاک بحریہ اور پاک فضائیہ کے کمانڈوز نے 10ہزار فٹ کی بلندی سے فری فال کا شاندار مظاہرہ کر کے صدر مملکت کو سلامی دی ٗ

کسی نا خوشگوار واقعہ سے نمٹنے کیلئے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اور جڑواں شہر میں سکیورٹی ہائی الرٹ رہی ٗ سڑکوں اور عمارتوں پر اضافی اہلکار تعینات کئے گئے ٗ موبائل سروس کئی گھنٹے بند رہی ۔

 

تفصیلات کے مطابق بدھ کو وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 23مارچ یوم پاکستان کی صبح کا آغاز31 اور صوبائی دارالحکومتوں میں 21،21 توپوں کی سلامی سے کیا گیااور پورے ملک میں یوم پاکستان منانے کا آغازنماز فجر میں ملک کی ترقی کیلئے خصوصی دعاؤں سے کیا گیا جس کے بعد یوم پاکستان کے موقع پر وفاقی دارالحکومت سالام آبا د میں شاندار رویتی پریڈ کا انعقاد کیا گیا ٗ مسلح افواج کی مشترکہ پریڈ کی تقریب کے مہمان خصوصی صدر مملکت ممنون حسین تھے ٗ

وزیراعظم محمد نواز شریف، وزیردفاع خواجہ محمد آصف، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل راشد محمود، چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف، پاک فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل سہیل امان، پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ذکاء اللہ کے علاوہ غیر ملکی مندوبین، سفارتکاروں، ہائی کمشنروں اور وفاقی اور صوبائی وزراء اور ارکان پارلیمان کے علاوہ عوام کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

صدر مملکت ممنون حسین بگھی پرسوار ہوکر پریذیڈنٹ باڈی گارڈز کے ہمراہ تقریب میں پہنچے جن کی آمد کا بگل بجااعلان کیا گیا ٗ سلامی کے چبوترے پر موجود وزیراعظم نواز شریف، وزیر دفاع خواجہ محمد آصف، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل راشد محمود اور آرمی چیف جنرل راحیل شریف، بحریہ اور فضائیہ کے سربراہان نے صدر مملکت کا استقبال کیا جس کے بعد قومی ترانہ بجایا گیا۔

 

صدر مملکت نے پریڈ کمانڈر کے ہمراہ پریڈ کا معائنہ کیا جس کے بعد پاک فضائیہ اور پاک بحریہ کے طیاروں نے شاندار فلائی پاسٹ کا مظاہرہ کیا جس میں جے ایف 17 تھنڈر اور ایف 16 ، میراج، پی تھری سی اورین، ایف سیون، پی جی سیون، قراقرم ایگل، سیپ 2000، کے ای تھری اواکس سمیت مختلف جنگی اور لڑاکا طیاروں نے حصہ لیا۔ فضائی مارچ پاسٹ کی قیادت پاک فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل سہیل امان نے کی۔ پاک فضائیہ اور بحریہ کے طیاروں نے سلامی کے چبوترے کے سامنے سے گزرتے ہوئے صدر مملکت کو سلامی دی۔

 

پریڈ میں 12نادرن لائٹ انفنٹری، پاک بحریہ، پاک فضائیہ، فرنٹیئر کور، پاکستان رینجرز پنجاب، پاکستان پولیس، پاکستان آرمی کی لیڈیز آفیسرز، گرلز گائیڈ اور اسکاؤٹس کے دستوں نے شاندار پریڈ کا مظاہرہ کیا۔ پاک فوج کے سپیشل سروسز گروپ کے دستے نے مخصوص انداز میں پریڈ کرتے ہوئے صدر مملکت کو سلامی دی۔

آرمڈکور کا دستہ جو الخالد ٹینک، ٹی اے ٹی یو ڈی ٹینک، الضرار ٹینکوں پر مشتمل تھا۔ آرٹلری کے بکتر بند، اے پی سیز، آرمی ایئر ڈیفنس، میزائل اور ٹریکنگ ریڈار سسٹم سے لیس ایف ایم 90 ، کور آف انجینئرنگ، کور آف سگنل کے دستوں نے بھی صدر مملکت کو سلامی دی۔ تقریب میں پاکستان کے جدید ترین نصر میزائل سسٹم، بابر کروز مزائل سسٹم، شاہین I، شاہین IIمیزائل سسٹم، بغیر پائلٹ طیارے، براق سمیت دفاعی سامان حرب کا بھی مظاہرہ کیا گیا۔